Welcome!

اردو اسٹوری فورم پہ خوش آمدید فورم پر بہترین اردو سیکس کہانیاں پڑھنے کے لیے ابھی رجسٹر ہوجائیں

Register Now

Announcement

Collapse

اناؤنسمنٹ

وی آئی پی ممبرشپ کی معلومات کے لیے اس ای میل پہ رابطہ کریں
[email protected]
See more
See less

Nasir Kazmi

Collapse
X
 
  • Filter
  • Time
  • Show
Clear All
new posts

  • Poetry Nasir Kazmi

    نئے کپڑے بدل کر جاؤں کہاں اور بال بناؤں کس کے لیے

    نئے کپڑے بدل کر جاؤں کہاں اور بال بناؤں کس کے لیے
    وہ شخص تو شہر ہی چھوڑ گیا میں باہر جاؤں کس کے لیے

    جس دھوپ کی دل میں ٹھنڈک تھی وہ دھوپ اسی کے ساتھ گئی
    ان جلتی بلتی گلیوں میں اب خاک اڑاؤں کس کے لیے

    وہ شہر میں تھا تو اس کے لیے اوروں سے بھی ملنا پڑتا تھا
    اب ایسے ویسے لوگوں کے میں ناز اٹھاؤں کس کے لیے

    اب شہر میں اس کا بدل ہی نہیں کوئی ویسا جان غزل ہی نہیں
    ایوان غزل میں لفظوں کے گلدان سجاؤں کس کے لیے

    مدت سے کوئی آیا نہ گیا سنسان پڑی ہے گھر کی فضا
    ان خالی کمروں میں ناصرؔ اب شمع جلاؤں کس کے لیے


  • #2
    عشق جب زمزمہ پیرا ہوگا
    حسن خود محو تماشا ہوگا

    سن کے آوازۂ زنجیر صبا
    قفس غنچہ کا در وا ہوگا

    جرس شوق اگر ساتھ رہی
    ہر نفس شہپر عنقا ہوگا

    دائم آباد رہے گی دنیا
    ہم نہ ہوں گے کوئی ہم سا ہوگا

    کون دیکھے گا طلوع خورشید
    ذرہ جب دیدۂ بینا ہوگا

    ہم تجھے بھول کے خوش بیٹھے ہیں
    ہم سا بے درد کوئی کیا ہوگا

    پھر سلگنے لگا صحرائے خیال
    ابر گھر کر کہیں برسا ہوگا

    پھر کسی دھیان کے صد راہے پر
    دل حیرت زدہ تنہا ہوگا

    پھر کسی صبح طرب کا جادو
    پردۂ شب سے ہویدا ہوگا

    گل زمینوں کے خنک رمنوں میں
    جشن رامش گری برپا ہوگاعشق جب زمزمہ پیرا ہوگا
    حسن خود محو تماشا ہوگا

    سن کے آوازۂ زنجیر صبا
    قفس غنچہ کا در وا ہوگا

    جرس شوق اگر ساتھ رہی
    ہر نفس شہپر عنقا ہوگا

    دائم آباد رہے گی دنیا
    ہم نہ ہوں گے کوئی ہم سا ہوگا

    کون دیکھے گا طلوع خورشید
    ذرہ جب دیدۂ بینا ہوگا

    ہم تجھے بھول کے خوش بیٹھے ہیں
    ہم سا بے درد کوئی کیا ہوگا

    پھر سلگنے لگا صحرائے خیال
    ابر گھر کر کہیں برسا ہوگا

    پھر کسی دھیان کے صد راہے پر
    دل حیرت زدہ تنہا ہوگا

    پھر کسی صبح طرب کا جادو
    پردۂ شب سے ہویدا ہوگا

    گل زمینوں کے خنک رمنوں میں
    جشن رامش گری برپا ہوگا

    Comment

    Users currently viewing this topic; (0 members and 1 guests)
    Users currently viewing this topic
    0
    Members

    Working...
    X